انتخابات میں دھاندلی کی تحقیقات کے لئے پارلیمانی کمیٹی بنائی جائے :سینیٹر فرحت اللہ بابر سیکرٹری جنرل پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرینز

Farhatullah Babar

سابق سینیٹر فرحت اللہ بابر نے مطالبہ کیا ہے کہ انتخابات میں دھاندلی کی تحقیقات کے لئے پارلیمانی کمیٹی بنائی جائے، تمام فارم 45 کا فارنزک آڈٹ کروا کر اسے الیکشن کمیشن کی ویب سائٹ پر لوڈ کیا جائے اور آرٹی ایس کی ناکامی کی تحقیقات کروائی جائیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے نادرا پر یہ الزام لگانے کے بعد کہ اس نے آرٹی ایس میں دخل اندازی کی اور نادرا نے اسے جھٹلاتے ہوئے مطالبہ کیا کہ آرٹی ایس کا فارنزک آڈٹ کرایا جائے کے بعد ایک نئی صورتحال پیدا ہوگئی ہے اور اس سے نمٹنے سے احتراز کرنے کی صورت میں بحران شدید ہوتا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ تمام فارم45 کا فرانزک آڈٹ کروا کر اسے الیکشن کمیشن کی ویب سائٹ پر ڈالنے سے مندرجہ ذیل سوالات کے جوابات مل جائیں گے۔ ایک سوال یہ کہ کیا یہ بات صحیح ہے کہ ہزاروں لاکھوں فارم45 جو اپ لوڈ کئے گئے ہیں ان میں پریزائڈنگ افسران کے دستخط نہیں جیسا کہ قانون کے مطابق ضروری ہے ایسا کیوں ہوا؟ دوسرا سوال یہ کہ کیا یہ بات صحیح ہے کہ 90فیصد فارم45 پر پولنگ ایجنٹس کے دستخط نہیں جیسا کہ قانون کے مطابق ضروری ہے ایسا کیوں ہوا؟ تیسرا سوال یہ کہ قانون کی یہ خلاف ورزی کیا دانستہ تھی اور کس نے کی؟ فرحت اللہ بابر نے کہا کہ نادرا کی جانب سے حکومتی الزامات کی نفی کرنا اور نادرا کی جانب سے یہ مطالبہ کہ فارنزک آڈٹ کروایا جائے ایک چیلنج ہے اور اسے وہی لوگ نظرانداز کر سکتے ہیں جو عوام دشمن ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سچ کا سامنا کرنے سے انکار کرنے سے یہ تاثر مزید گہرا ہوگا کہ پاکستان کے عوام کے ساتھ فراڈ کیا گیا، ان کا میڈیٹ چرایا گیا اور حکومت کی تبدیلی میں بھی فراڈ کیا گیا تاکہ ایسا کرنے سے کسی خفیہ ایجنڈے پر عملدرآمد کیا جا سکے۔
50% LikesVS
50% Dislikes

Leave a Reply

Please Login to comment
  Subscribe  
Notify of
%d bloggers like this: