کراچی کی عوام کی خاطر بلاول بھٹو زرداری نے ایم کیو ایم پاکستان کو سندھ میں وزارتیں دینے کی پیشکش کر دی


کراچی: پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ اگر ایم کیو ایم صوبے کے حقوق کی خاطر عمران خان کی حکومت کو گرادے تو پیپلز پارٹی انہیں صوبائی حکومت میں اتنی وزارتیں دینے کے لیئے تیار ہے جتنی ان کے پاس وفاق میں ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ کراچی سمیت پورے ملک میں جاری ظلم کو روکنے کی خاطر تحریک انصاف کی اتحادی جماعتوں کو آج نہیں تو کل یہ اتحاد ختم کرنے کا فیصلہ کرنا ہی پڑے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی میں مکمل کئے گئے چار میگا پروجیکٹس کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ پی پی پی چیئرمین نے مزید کہا کہ ہم نے پہلے بھی مل کر کام کیا ہے اور کراچی کی عوام کی خاطر ایم کیو ایم کا سئو فیصد ساتھ دینے کے لیئے اب بھی تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ چاہتے ہیں کراچی میں زیادہ سے زیادہ ترقیاتی کام ہوں، لیکن تحریک انصاف کی وفاق دشمن پالیسیوں کی وجہ سے حکومتِ سندھ بدترین مالی مشکلات کا شکار ہے، لیکن اس کے باوجود یہ واحد حکومت ہے جو ترقیاتی کام کر رہی ہے، جو سب کو نظر بھی آرہا ہے۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ وفاقی حکومت کی گئس پالیسی بھی غیر آئینی ہے، کیونکہ گئس پر پہلا حق ان کا ہے جہاں سے یہ نکلتی ہے۔ جبکہ ان وفاقی وزراء سے استعیفیٰ لیا جائے جو موجودہ بحران کا ذمیدار صوبے کی عوام کو قرار دے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت کی پالیسیوں کی وجہ سے غریب اور سفید پوش طبقات کے لیئے حالات دن بدن مشکل ہوتے جا رہے ہیں اور ان حالات میں بینظیر انکم سپورٹ پروگرام سے 8 لاکھ مستحق خواتین کا نام نکالنا ظلم اور زیادتی ہے۔ حکومتِ سندھ اِس معاملے پر عدالت سے رجوع کرے۔ غریب خواتین سے ایک ہزار روپے چھیننے والے سیاستدانوں اور حکومت پر لعنت ہو۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ انتھائی سردی کے موسم میں سکھر سمیت مختلف علاقوں میں لوگوں کے بے گھر کیا جارہا ہے۔ میں عدالتی فورمز کو اپیل کرتا ہوں کہ کم از کم موسمِ سرما کے دوارن یہ انسدادِ حددخلی مہم معطل کی جائے، کیونکہ غریب عوام کی بڑی تعداد کچی بستیوں میں رہتی ہے۔ پی پی پی چیئرمین نے حکومتِ سندھ کی جانب سے جاری ترقیاتی کام پر اطمینان کا اظہار کیا اور کہا کہ اگر اسی جذبے کے ساتھ صوبائی حکومت کام کرتی رہی تو آئںدہ انتخابات میں کراچی کی عوام مایوس نہیں کرے گی، جبکہ کراچی کی عوام کو اب معلوم ہو چکا ہے کہ عمران خان کا ہر وعدہ جھوٹا اور دوکھا تھا۔ تقریب میں وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ، سلیم مانڈوی والا، نثار کھڑو، ناصر شاہ، سعید غنی، مرتضی بلوچ، وقار مہدی، راشد ربانی، عاجز دھامرا، یوسف بلوچ، جاوید نایاب لغاری اور دیگر رہنما بھی موجود تھے۔ کراچی کے میئر وسیم اختر بھی تقریب میں موجود تھے۔ بعد ازاں، چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کورنگی ڈھائی نمبر اور کورنگی پانچ نمبر پر پلوں سمیت حیدر علی انڈرپاس اور کینٹ اسٹیشن کی اطراف کی سڑکوں کا بھی افتتاح کیا۔ چاروں میگا منصوبے رواں سال 2019 میں ہی شروع کئے گئے تھے، جن پر ایک ارب 74 کروڑ اور 70 لاکھ روپوں کی لاگت آئی ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

Leave a Reply

Please Login to comment
  Subscribe  
Notify of
%d bloggers like this: