عمران خان جیسے آئے ویسے ہی باعزت واپس جائیں تاکہ انہیں مزید ٹیکوں کی ضرورت نہ پڑے: مولا بخش چانڈیو

https://www.youtube.com/watch?v=RLhGSUzXhwM&t=110s

پی پی کے رہنما مولا بخش چانڈیو نے پنجاب اسمبلی آمد پر حسن مرتضیٰ پارلیمانی لیڈر کے ساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ٹک ٹاک اور ٹیکوں پر چل رہی ہے. ریلوے پاکستان کا اہم ادارہ ہے، ہر کسی کو چور چور کہتے تھے اب ذمہ داری قبول کریں، اب کہتے ہیں کہ ادارہ جھوٹا ہے، آپ سے لوگ مایوس ہو چکے ہیں، لوگوں کا جینا مشکل ہو چکا ہے، ملک نئے بحران میں داخل ہو رہا ہے. مسائل حل کرنا ان کے بس کی بات نہیں،آپ اہنے خطابات میں اپنے کارنامے کیوں نہیں بتاتے، ہم نہیں کہتے کہ غیر آئینی طریقے سے تبدیلی آئے، آئینی طریقہ اختیار کرنا ہمارا حق ہے،ٹک ٹاک اور ٹیکوں کے سہارے چلنے والے حکومت ہے،

سینیٹر مولا بخش چانڈیو نے کہا ہے کہ حکومت کی تبدیلی کیلئے کوئی غیرقانونی قدم نہیں اٹھایا جائے گا، تاہم پیپلزپارٹی حکومت کے خلاف جب کوئی فیصلہ کن قدم اٹھائے گی تو واپس نہیں ہوگا۔ مولا بخش چانڈیو کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی نسلی فرقہ وارانہ علاقائی کی بجائے قومی جمہوری سیاست کرتی ہے، سینیٹ کی طرح پنجاب اسمبلی میں بھی حقیقی اپوزیشن پیپلز پارٹی ہی کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ن لیگ اپوزیشن میں کیا کردار ادا کررہی ہے یہ ان سے لازمی پوچھا جانا چاہیئے۔

سیکریٹری اطلاعات پی پی پی سینیٹر مولابخش چانڈیو نے حسن مرتضیٰ کی دعوت پر پنجاب اسمبلی کا دورہ کیا، سینیٹر مولابخش چانڈیو کی سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الہٰی سے بھی ملاقات ہوئی، پرویز الٰہی نے مولابخش چانڈیو کی آمد کا سن کر انہیں اپنے چیمبر میں مدعو کیا.

ملاقات میں حسن مرتضیٰ ، علی حیدر گیلانی اور شازیہ عابد بھی موجود تھے، ملاقات میں پارلیمنٹ اور سیاسی قوتوں کو مضبوط بنانے پر تبادلہ خیال کیا گیا،پیپلز پارٹی اور قاف لیگ کے قائدین میں ملک کو درپشین بحرانوں پر بھی گفتگو کی گئی، سپیکر پنجاب اسمبلی نے عوامی نمائندگی کا حق ادا کرنے پر حسن مرتضیٰ کی تعریف کی۔

50% LikesVS
50% Dislikes

Leave a Reply

Please Login to comment
  Subscribe  
Notify of
%d bloggers like this: