اس وقت کرونا وائرس کے تازہ ترین اعدادوشمار کے مطابق 15 ہزار سے زائد کرونا کے کیسز ملک میں ہوچکے ہیں جو بہت تشویشناک بات ہے: ڈاکٹر نفیسہ شاہ

اس وقت کرونا وائرس کے تازہ ترین اعدادوشمار کے مطابق 15 ہزار سے زائد کرونا کے کیسز ملک میں ہوچکے ہیں جو بہت تشویشناک بات ہے، ڈاکٹر نفیسہ شاہ

تین صوبوں میں اموات 100 سے تجاوز کر گئی ہیں، سندہ میں 100 سے زیادہ لوگ فوت ہوئے ہیں، پنجاب میں 100 سے زیادہ لوگ فوت ہوئے ہیں اور خیبرپختونخوا میں بھی 100 سے زیادہ لوگ فوت ہوئے ہیں، یہ بہت تشویشناک اعدادوشمار آرہے ہیں، نفیسہ شاہ اس سے زیادہ تکلیف دہ بات حکومت وقت کی حکمت عملی ہے جس میں ایک اُلجھن ہے وہ اس سے زیادہ تشویشناک ہے،پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرینز کی مرکزی سیکرٹری اطلاعات و رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے اپنے وڈیو بیان میں کہا کہ اگر ہمیں کرونا وائرس کو شکست دینی ہے تو دو طریقے ہیں دنیا بھر میں جو مختلف ممالک نے اپنائے ہیں ایک طریقہ مکمل لاک ڈاؤن کا ہے جو چین نے اپنایا اور دوسرا جن ممالک نے لاک ڈاؤن میں تھوڑی نرمی دکھائی تو انہوں نے وسیع پیمانے پر کرونا کی ٹیسٹنگ کرائی ہے،ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے کہا کہ افسوس سے کہنا پڑ رہا ہے جہاں سندھ نے پہلا مکمل لاک ڈاؤن کا فیصلہ کیا لیکن اس کے دوسرے مرحلے میں وفاقی حکومت نے اعلان کیا کہ لاک ڈاؤن میں نرمی ہوگی، ایک طرف لاک ڈاؤن میں آپ نے نرمی کردی اور دوسری طرف جو آپ کی کمٹمنٹ تھی جو بار بار ہم سن رہے تھے کہ این ڈی ایم اے کے چیئرمین صاحب بار بار یہ کہہ رہے ہیں کہ ہم ٹیسٹنگ بڑھائیں گے اور کہتے ہیں کہ کم وقت میں 50 ہزار روزانہ ٹیسٹ ہوں گے،خود صحت کے معاون خصوصی ظفر مرزا صاحب اپنےتازہ ترین بیان میں یہ کہتے ہیں کہ اس وقت ٹیسٹنگ کی جو اہلیت ہے وہ 15 ہزار ہے، لیکن بہت افسوس کے ساتھ یہ کہنا پڑتا ہے اگر آج بھی آپ کی 15 ہزار کی اہلیت ہے تو 15 ہزار بھی ٹیسٹ نہیں ہورہے ہیں، آج بھی ملک میں 8 ہزار یا اس سے کچھ زائد ٹیسٹ ہورہے ہیں اور اس سے بیشتر ٹیسٹ سندھ کر رہا ہے، پچھلے ایک ہفتے سے سب سے زیادہ ٹیسٹنگ کی تیزی سندھ میں ہوئی ہے تو سندھ ایک کمٹمنٹ اور سچائی سے اپنا ڈیٹا بتا رہا ہے، لیکن اس کے برعکس پی ٹی آئی کی جن صوبوں میں حکومت ہے بالخصوص پنجاب جہاں 50 فیصد سے زائد ہمارے شہری رہتے ہیں وہاں ٹیسٹنگ تقریباً 2 ہزار کے قریب تھی جب کہ 2 ماہ گزرنے کے بعد پچھلے ایک ہفتے سے پہلے پنجاب زیادہ ٹیسٹ کر رہا تھا دن میں چار ہزار ٹیسٹ کر رہا تھا لیکن بہت حیرت کی بات ہے کہ اب انہوں نے ٹیسٹنگ میں کمی کر دی ہے کیا یہ حادثاتی ہے، یا آپ دنیا کو یہ دکھا رہے ہیں کہ ہمارے کیسز بہت کم آرہے ہیں اور سندھ کے کیسز بہت بڑھ رہے ہیں، میرا سوال ہے وفاقی حکومت سے کہ آپ کی ٹیسٹنگ بڑھانے کی کمٹمنٹ پوری نہیں ہورہی ہے، اگر ٹیسٹنگ بڑھے گی تو ہمیں پتہ چلے گا کہ کروناوائرس کہاں زیادہ پھیل رہا ہے،ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے مزید کہا کہ وفاقی حکومت دوغلے پالیسی ترق کریں اور پاکستان کی عوام کو بتائیں کہ آپ کی کیا حکمت عملی ہے اگر مکمل لاک ڈاؤن بھی نہیں ہے اور ٹیسٹنگ بھی زیادہ نہیں ہے تو آپ اس ملک کو کہاں دھکیل رہے ہیں پھر آپ پاکستانی عوام کو کروناوائرس کے منہ میں دے رہے ہیں، وفاقی حکومت کو چاہیے کہ جہاں ٹیسٹنگ میں کمی آرہی ہے وہاں ٹیسٹنگ بڑھائیں بالخصوص پنجاب اور کے پی کے میں جہاں دیکھا جارہا ہے کہ ایک ہفتے سے تسلسل سے ٹیسٹنگ میں کمی آرہی ہے وہاں ٹیسٹنگ بڑھائیں آپ روزانہ 50 ہزار ٹیسٹنگ کا ٹارگٹ پورا کریں،

50% LikesVS
50% Dislikes

Leave a Reply

Please Login to comment
  Subscribe  
Notify of
%d bloggers like this: