گوجرانوالہ کے جلسے سے پہلے ہی حکومتی ایوانوں میں زلزلہ آگیا ہے: قمر زمان کائرہ

مہنگائی اور بے روزگاری سے تنگ عوام حکومت کے خلاف سڑکوں پر آنے کے لئے بے تاب ہیں 16 اکتوبر کو نااہل سلیکٹڈ اور جعلی حکومت کے خلاف پہلوانوں کے شہر گوجرانوالہ میں تمام پہلوان میدان میں ہوں گے ان خیالات کا اظہار پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر قمر زمان کائرہ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کے مختلف شہروں میں سیاسی کارکنوں کو ہراساں کرنا اور گرفتاریاں اس جمہوری تحریک کا راستہ نہیں روک سکتیں ۔

انہوں نے کہا کہ ایک طرف صدر پاکستان عارف علوی اور وزیر اعظم عمران نیازی اور ان کے وزراء اپوزیشن کے احتجاج کوجمہوری حق قرار دے رہے ہیں دوسری طرف ریاستی مشینری سیاسی کارکنوں کو ہراساں ،گرفتار کرنے کے علاوہ ان کے خلاف اوچھے ہتھکنڈوں کواستعمال کررہی ہے۔

قمر زمان کائرہ نے کہا کہ حکومت ریاستی مشینری کا ناجائز استعمال فوری بند کرے۔انہوں نے کہا کہ گوجرانوالہ کے جلسے سے پہلے ہی حکومتی ایوانوں میں زلزلہ آگیا ہے اور حکومتی وزراء کے بیانات اس بات کی غمازی کرتے ہیں کہ اپوزیشن کا خوف ان کو کھائے جا رہا ہے انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول زرداری بھٹو کی قیادت میں بڑا جمہوری قافلہ کھاریاں سے شروع ہوگا اور راستے میں ہزاروں کارکن اور لوگ اس میں شامل ہوں گے انہوں نے کہا کہ اس نااہل حکومت سے غریب عوام کی جان چھڑانے کا وقت آن پہنچا ہے۔

قمر زمان کائرہ نے کہا کہ عمران خان نے پنجاب پولیس کو نیازی فورس بنا دیا ہے جبکہ ٹائیگر فورس بھی نیازی فورس ہے اور اس فورس پرتاجر برادری کوبھی سخت تشویش ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اب پاکستان میں کوئی نیازی فورس نہیں چلے گی صرف جمہوری فورس ہی چلے گی ۔انہوں نے کہا کہ موجودہ نااہل اور مسلط شدہ حکومت کو گھر بھیجنے کے لیے اس وقت پارٹی کارکنوں کو چاہیے کہ وہ بلاول بھٹو کے ساتھ ساتھ بھٹو ازم کو بھی سربلند کریں تاکہ ملک میں جمہوریت کا پرچم بھی سربلند ہو۔

50% LikesVS
50% Dislikes

Leave a Reply

Please Login to comment
  Subscribe  
Notify of
%d bloggers like this: