مادرِ جمہوریت بیگم نصرت بھٹو ہمت و شجاعت کا پیکر تھیں:بلاول بھٹو زرداری

کراچی (23 اکتوبر 2020) پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ مادرِ جمہوریت بیگم نصرت بھٹو ہمت و شجاعت کا پیکر تھیں، اُن کی جمہوریت کے لیئے جدوجہد اور قربانیاں تاریخ کا ناقابلِ فراموش باب ہے۔ پاکستان کی سابق خاتونِ اول بیگم نصرت بھٹو کی نویں برسی کے موقعے پر جاری کردہ بیان میں پی پی پی چیئرمین نے انہیں شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کیا ہے۔ پاکستان پیپلز پارٹی کی جانب سے بیگم نصرت بھٹو کی برسی آج (23 اکتوبر، بروز جمعہ) سادگی سے اور انتھائی عقیدت و احترام کے ساتھ منائی جائے گی۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ بیگم نصرت بھٹو نے قائدِ عوام شہید ذوالفقار علی بھٹو کے عدالتی قتل کے بعد اپنے ذاتی دکھ کو بھلا کر قوم کی آئںدہ نسلوں کے روشن مستقبل کی خاطر پارٹی کارکنان سمیت پاکستان بھر کی جمہوریت پسند قوتوں کو آمریت کے خلاف ایک پلیٹفارم پر متحد کیا اور ایک تاریخی تحریک کی قیادت کی۔ انہوں نے کہا کہ بیگم نصرت بھٹو ایک وزیراعظم (دیوان) سر شاہنواز بھٹو کی بہو، پاکستان کے پہلے منتخب وزیراعظم شہید ذوالفقار علی بھٹو کی اہلیہ اور اسلامی دنیا کی پہلی منتخب وزیراعظم شہید محترمہ بینظیر بھٹو کی والدہ تھیں، جبکہ وہ خود بھی پروقار، حوصلہ مند اور تاریخ ساز شخصیت تھیں، جو جیالوں اور عوام کے دلوں میں ہمیشہ زندہ رہیں گی۔ بلاول بھٹو زرداری نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ پاکستان پیپلز پارٹی اس مشن کو پایئہ تکمیل پر پہنچانے کے لیئے سرگرمِ عمل رہے گی، جس کی خاطر مادرِ جمہوریت نے جدوجہد کی اور مصائب برداشت کئے تھے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

Leave a Reply

Please Login to comment
  Subscribe  
Notify of
%d bloggers like this: