پیپلز پارٹی پاکستان میں آزادی صحافت کے تحفظ اور فروغ کے لئے جدوجہد کرتی رہے گی: پیپلز پارٹی بلوچستان ویمن ونگ

کوئٹہ: پاکستان پیپلز پارٹی بلوچستان ویمن ونگ کی صدر غزالہ گولا‘ جنرل سیکرٹری زرینہ زہری اور انفارمیشن سیکرٹری نوشین پطرس نے کہا ہےپاکستان میں آزادی صحافت کو لاحق خطرات بڑھ رہے ہیں کیونکہ حکومت میڈیا کو کو خاموش کرنے کیلئے فسطائی ہتھکںڈے استعمال کر رہی ہے۔
آزادی صحافت کے عالمی دن کے موقع پر اپنے پیغام میں ، انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ پیپلز پارٹی صحافیوں اور صحافتی تنظیموں کے ساتھ مل کر ملک میں آزادی صحافت اور میڈیا کیخلاف ہر قسم کے خطرات اور دھمکیوں کا مقابلہ کرے گی۔انہوں نے کہا کہ ہر طبقے کی حقیقی نمائندہ ہونے کی حیثیت سے پیپلز پارٹی پاکستان میں آزادی صحافت کے تحفظ اور فروغ کے لئے جدوجہد کرتی رہے گی۔
انہوں نے کہا کہ حکومت کی پالیسیوں کی وجہ سے میڈیا انڈسٹری کو مالی بحرانوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اور صحافی بے روزگار ہو رہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ان کی پارٹی کا ہمیشہ میڈیا کی آزادی اور صحافیوں کے تحفظ کے بارے میں واضح موقف رہا ہے۔ انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ پیپلز پارٹی صحافیوں کے شانہ بشانہ کھڑی رہے گی اور حکومت کی طرف سے ہونے والی ناانصافیوں کے خلاف جدوجہد جاری رکھے گی۔ مزید براں پارٹی صحافیوں ، سیاسی کارکنوں اور شہریوں کے آزادانہ اظہار خیال کے لئے محفوظ ڈیجیٹل ماحول کے قیام کے لئے جدوجہد بھی جاری رکھے گی۔
انہوں نے کہا آزاد میڈیا کے بغیر جمہوریت نامکمل ہے، اور پیپلز پارٹی نے ہمیشہ آزاد میڈیا اور اظہار رائے کی آزادی کی حمایت کی ہے۔مثبت اور جمہوری رائے عامہ کی تشکیل کے لئے میڈیا آزادیاں ضروری ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ پریس فریڈم اور آزادی اظہار کا احترام معاشرے میں جمہوری رویوں کی نشوونما کے لئے اہم ہے ، اور پریس کی عزت اور وقار پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہونا چاہئے۔ صحافیوں اور پیپلز پارٹی کے رہنماؤں اور کارکنوں نے آمروں اور جمہوری مخالفوں کے خلاف کندھے سے کندھا ملا کر لڑی ہے۔ اگرچہ ڈکٹیٹروں نے ہماری قیادت کے خلاف دنیا کا سب سے مہنگا میڈیا ٹرائل کو جاری کیا لیکن وہ صحافی برادری اور پارٹی کے مابین تعلقات کو توڑ نہیں سکے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

Leave a Reply

Please Login to comment
  Subscribe  
Notify of
%d bloggers like this: